صفحہ اول | مسائل | تلہ گنگ شہر میں ہیوی ٹریفک کی آمد ورفت سیاسی اثر و رسوخ کی وجہ سے بند نہ ہو سکی

تلہ گنگ شہر میں ہیوی ٹریفک کی آمد ورفت سیاسی اثر و رسوخ کی وجہ سے بند نہ ہو سکی

Font size: Decrease font Enlarge font
تلہ گنگ شہر میں ہیوی ٹریفک کی آمد ورفت سیاسی اثر و رسوخ کی وجہ سے بند نہ ہو سکی

تلہ گنگ(تلہ گنگ ٹائمز ڈاٹ کام) تلہ گنگ شہر میں ہیوی ٹریفک کی آمد ورفت سیاسی اثر و رسوخ کی وجہ سے بند نہ ہو سکی ۔کئی قیمتی جانوں کا خون بھی ان سیاست دانوں کا دل بھی نرم کرنے میں ناکام رہا ۔تلہ گنگ سے باہر کروڑوں روپے کی لاگت سے دو دو بائی پاس بنائے گئے تا کہ تلہ گنگ شہر میں بڑھتے ہوئے ٹریفک دباؤ کو کم کیا جا سکے ۔لیکن ان بائی پاس کی موجودگی کے باوجود ہیوی ٹریفک سیاسی اثر و رسوخ کی وجہ سے شہر میں گزر رہی ہے ۔جس کی وجہ سے کئی حادثات رونما ہوئے اور متعدد قیمتی جانیں ضائع ہوئیں لیکن منتخب عوامی نمائندوں کے کانوں پر جون تک نہیں رینگی ۔نہ کبھی اُنہوں نے متاثر خاندانوں اظہار ہمدری کیا ۔چند روز قبل بھی تیز رفتار مسافر کوچ نے غریب رکشہ ڈرائیور کو ون وے کی خلاف ورزی کرتے ہوئے روند ڈالا ۔جس پر اسسٹنٹ کمشنر تلہ گنگ نے ہیوی ٹریفک پر اندورن شہر گزرنے پر پابندی عائد کر دی ۔لیکن با اثر سیاست دانوں کی اشیرباد سے چلنے والی کوچز نے یہ احکامات ہوا میں اُڑا دیئے ۔عوامی حلقوں نے تلہ گنگ شہر کے داخلی اور خارجی راستوں پر آہنی بیرئیر لگانے کا مطالبہ اور حادثہ کی مرتکب کوچز مالکان کیخلاف مقدمات درج کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔

Subscribe to comments feed Comments (3 posted)

avatar
Prada Replica Handbags 09/11/2016 04:49:48
تلہ گنگ شہر میں ہیوی ٹریفک کی آمد ورفت سیاسی اثر و رسوخ کی وجہ سے بند نہ ہو سکی.
avatar
Jordan Release Dates 17/05/2017 12:34:42
In an interview with Sports Illustrated highlighting Gay's sneaker collection, he recalled first seeing the sneakers in a game against the Boston Celtics.
Reply Thumbs Up Thumbs Down
-2
Report as inappropriate
avatar
relojes imitacion 06/12/2017 15:09:49
Realmente consejos muy útiles se proporcionan aquí. Muchas gracias. Sigan con las buenas obras.
Reply Thumbs Up Thumbs Down
-2
Report as inappropriate
total: 3 | displaying: 1 - 3

Post your comment

  • Bold
  • Italic
  • Underline
  • Quote

Please enter the code you see in the image:

Captcha
  • Email to a friend Email to a friend
  • Print version Print version
  • Plain text Plain text

Tagged as:

No tags for this article

Rate this article

0