صفحہ اول | کالم | بلدیاتی انتخابات کی بازگشت اور تحصیل تلہ گنگ کی یونین کونسلوں کا سیاسی پس منظر

بلدیاتی انتخابات کی بازگشت اور تحصیل تلہ گنگ کی یونین کونسلوں کا سیاسی پس منظر

Font size: Decrease font Enlarge font
بلدیاتی انتخابات کی بازگشت  اور تحصیل تلہ گنگ کی یونین کونسلوں کا سیاسی پس منظر

تحریر : ۔ چوہدری غلام ربانی

قارئین محترم: ۔ گزشتہ کالم میں راقم نے تحصیل لاوہ ،ایم سی اور تحصیل لاوہ کی کونسلوں میں موجود سیاسی پارٹیوں اور دھڑا بندی پر تفصیل سے بحث کی تھی ۔

اب تحصیل تلہ گنگ کے حوالے سے تفصیل گفتگو قارئین کی نظر ہے ۔ تحصیل تلہ گنگ میں ایک میونسپل کمیٹی (ایم سی) اور 19یونین کونسلز ہیں ۔ جبکہ تین تھانے (تھانہ ٹمن ،تھانہ صدر،تھانہ سٹی) تحصیل تلہ گنگ پی پی23اور پی پی 24کے علاقے شامل ہیں ۔ تحصیل تلہ گنگ میں مختلف سیاسی پارٹیاں اور سیاسی دھڑے موجود ہیں ۔ زیادہ موثر سیاسی دھڑے ہیں جو ہر الیکشن میں اثر انداز ہوتے ہیں اور انہی دھڑوں کے ادھر اُدھر ہونے سے انتخابی نتاءج تبدیل ہوجاتے ہیں ۔

تحصیل تلہ گنگ میں پرانے سیاسی دھڑے تو ملک سلیم اقبال ،سردار غلام عباس،سردار ممتاز ٹمن اور سردار منصور ٹمن کے تھے مگربعد ازاں وقت کے ساتھ ساتھ دھڑوں اور سیاسی گروپوں میں تفیر ہوا اور ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہوئے اور کئی نئے گروپس بھی معرض وجود میں آئے ۔ تحصیل بھر میں کسی دور میں پاکستان پیپلز پارٹی،پاکستان مسلم لیگ ن ،جماعت اسلامی ،قومی اتحاد،جمیعت اسلام ف ہوا کرتی تھی ۔ جنرل (ر) مشرف کے دور میں ق لیگ نے جنم لیا تھا اور ق لیگ کے آتے ہی تحصیل تلہ گنگ اور تحصیل لاوہ میں نئی روایا ت نے جنم لیا اور سیاست کے پرانے مردجہ اصول و ضوابط یکسر تبدیل ہو گئے ۔

جیسا کہ جنرل مشرف کے دور میں ق لیگ نے لیا تھا اسی طرح تحریک انصاف بھی جنرل مشرف کے دور میں ہی معرض وجود میں آئی ۔ اور انہی کے دور میں پروان چڑھنا شروع ہوئی ۔ 2002 میں الیکشن میں تحریک انصاف کے قائد عمران خان نے میانوالی سے واحد سیٹ حاصل کی تھی ۔ پورے ملک میں پی ٹی آئی نے واحد سیٹ حاصل کی تھی ۔ وقت کے ساتھ ق لیگ اقتدار کی سیڑھیوں سے نیچے اترنا شروع ہو ئی اور پی ٹی آئی اقتدار کی سیڑھیاں چڑھنا شروع کر دیں ۔ جنرل پرویز مشرف کے دور میں ایک وقت ایسا بھی تھا کہ وزیر اعلی پنجاب چوہدری پرویز الہی (ق لیگ) اور وزیر اعظم پاکستان چوہدری شجاعت ق لیگ تھے ۔ سندھ کے وزیر اعلی ق لیگ کے ارباب رحیم اور بلوچستان کے وزیر اعلی ق لیگ جام یوسف مرحوم جبکہ سپیکر قومی اسمبلی چوہدری امیر حسین ق لیگ اور چیئرمین سینٹ میاں محمد سومروق لیگ تھے ۔ صرف ;758075; میں جے یو آئی کی حکومت تھی ۔ اکرم دورانی وزیر اعلی ;758075;تھے ۔ پنجاب اسمبلی کا سپیکر محمد افضل ساہی (ق لیگ) سے تھے ۔ جنرل پرویز مشرف کے دور میں ہی پی ٹی آئی کی پرورش ہونا شروع ہو گئی تھی اور بلاغت سے لڑکپن کا سفر شروع ہو گیا تھا ۔ اس وقت سے ہی اقتدار کے ایوانوں تک لانے والی قوتوں نے پی ٹی آئی پر ہاتھ رکھنا شروع کردیا تھا ۔ 2008کے الیکشن میں پی ٹی آئی پرموشن شروع ہو گیا اور ایک سیٹ سے 12سیٹوں پر آگئے جبکہ 2013کے الیکشن میں 38سیٹیں حاصل کرلیں ۔ اسی کے اثرات تحصیل تلہ گنگ میں بھی نمودار ہونا شروع ہوئے جو آہستہ آہستہ 2018کے انتخابات میں نمودار ہو گئے اور تبدیلی آگئی ۔

2018کے الیکشن کے نتیجہ میں 1ایم پی اے اور ایک ایم این اے پی ٹی آئی کے اتحاد اور تعاون سے ق لیگ کا منتخب ہو گیا ۔ جبکہ تلہ گنگ شہر اور گردونواح سے پی ٹی آئی کی نشست پر ایم پی اے سردار آفتاب اکبر منتخب ہوگئے ۔ پی ٹی آئی اگر ق لیگ کیساتھ اتحاد نہ کرتی تو ق لیگ کے لیے کامیابی مشکل تھی ۔ مزید یہ کہ ق لیگ کی کامیابی میں سردار غلام عباس اور سردار ممتاز خان ٹمن اور کرنل ر سلطان سرخرواعوان کا بہت عمل دخل ہے بلکہ اگر یہ کہا جائے کہ مزکورہ شخصیات کی وجہ سے ق لیگ نے کامیابی حاصل کی تو درست ہو گا ۔ اب زرا آمدہ بلدیاتی الیکشن کے حوالے سے تحصیل تلہ گنگ 19یونین کونسلوں اور ایم سی تلہ گنگ کا انتخابی جائزہ یا تجزیہ پیش خدمت ہے ۔ قارئین قبل ازیں تو اس تحصیل میں 19یونین کونسلز تھیں لیکن اب بلدیاتی سسٹم کو تبدیل کر کے ویلج کونسلز بنا دی گئی ہیں ۔ جن کی تعداد ساٹھ کے قریب ہیں ۔ ان ویلج کونسلوں کو تحصیل کے ساتھ انشا اللہ آئندہ زیر بحث لائینگے ۔ ابھی ہم پرانے سسٹم کے تحت سابقہ یونین کونسلوں میں موجود دھڑا بندیوں کو زیر بحث لاتے ہیں تاکہ ویلج کونسلوں کے بننے اور فعال ہونے سے پہلے کسی علاقہ کا پرانا سیاسی سسٹم بھی پس منظر میں ہے ۔

تو یونین کونسل نر گھی کا تذکرہ کرتے ہیں یو سی نر گھی میں نرگھی ،مرجان ،دیوال،متھرالہ،ڈھوک پٹھان ،رحمان آباد شامل ہیں ۔ یہاں پر پہلے تو ملک سلیم اقبال اور سردار غلام عباس دو ہی سیاسی دھڑے ہوتے تھے مگر تبدیلیوں کی لہر چلی تو یہاں بھی کچھ نئے سیاسی دھڑے معرض وجود میں آئے ۔ یو سی نرگھی میں سابق چیئر مین ملک قدیر باز نرگھی،ملک خضر حیات رحمان آباد کا تعلق سردار غلام عباس گروپ سے ہے ۔ جبکہ ملک سلیم اقبال گروپ کے (ر) انسپکٹر پولیس ملک محمد خان نرگھی ،ملک زوالفقار مرجان ،حاجی ملک فتح خان،نرگھی کے سیٹھ رزاق موجود ہیں ۔ جبکہ یو سی نرگھی میں ڈھوک پٹھان سے مرحوم ملک نجب خان کا بھی مضبوط گروپ موجود ہے ۔ ملک نجب خان کے بھائی ملک فتح خان ، ملک تنزیل اعوان اور ملک غلام شبیر ڈھوک پٹھان (پٹرول پمپ والے) ملک ساجد اعوان آف رحمان آباد کا سیاسی گروپ سردار ممتاز خان ٹمن سے وابستہ ہے ۔ یہاں پر ہی ملک سعادت خان آف ڈھوک پٹھان کا گروپ بھی موجود ہے جن کا تعلق ملک اسد علی خان ڈھیر مونڈ سے ہے ۔

یونین کونسل کوٹسارنگ ۔ اس میں کوٹسارنگ ،مرالی،مصطفی آباد شامل ہیں ۔ یہاں پر چیئرمین یوسی راجہ دلبر پھل بادشاہ ملک سلیم اقبال گروپ سے تعلق رکھتے ہیں ۔ کوٹسارنگ میں ہی الحاج چوہدری نور محمد ارائیں کا بھی کافی اثر رسوخ ہے ۔ ارائیں برادری کابھی یہاں پر اچھا خاصا ووٹ بنک ہے ۔ اس یوسی میں ارائیوں کے لیڈر حاجی نور محمد ارائیں ہیں جو جدہ سعودیہ میں مقیم ہیں اور میا ں نواز شریف فیملی کیساتھ گہرے مراسم ہیں ۔ ن لیگ کے نظریاتی ورکرہیں اور میاں فیملی سے تعلقات کی بنیاد پر کوٹسارنگ میں بے پناہ ڈویلپمنٹ بھی کروا چکے ہیں ۔ یہاں پر ن لیگ کے نظریاتی ورکر ملک صفدر اعوان سابق ممبر ضلع کونسل بھی ہیں جن کے ساتھ بھی برادری ہے ان کا سیاسی تعلق سردار غلام عباس سے بہت گہرا ہے ۔ جبکہ سابق ناظم یوسی کو ٹسارنگ راجہ الظاف حسین کا بھی اپنا سیاسی دھڑا موجود ہے ۔ راجہ الطاف حسین ق لیگ کے حافظ عمار یاسر کے ساتھ کھڑے ہیں ۔ ملک سلیم پولٹری والے اور شادی خان بھی سردار غلام عباس گروپ سے تعلق رکھتے ہیں ۔ یہاں پر کشمیری برادری کے چوہدری خالد حسین کا دھڑا بھی ہے جو حافظ عمار یاسر ق لیگ کے ساتھ ہیں ۔

یونین کونسل جسیال جس میں جسیال ،ترگڑ،چوکیرہ ،پیڑہ جانگلہ ،نکہ ریحان شامل ہیں ۔ یہاں پر پہلے تو ملک سلیم اقبال اور سردار غلام عباس گروپ ہی تھے ۔ مگر اب تیسرا گروپ حافظ عمار یاسر ق لیگ بھی قائم ہو چکا ہے ۔ ملک سلیم اقبال گروپ کے ملک محمد نواز سابق ناظم جسیال او ر ان کا بھائی ملک محمد اعجاز اعوان ہیں نظریاتی مسلم لیگ ن کے ورکر ہیں ۔

جبکہ ملک عرفان جسیال ،ملک اسحاق کونسلر ،ملک طارق سابق چیئر مین یوسی جسیال سردار غلام عباس گروپ سے تعلق رکھتے ہیں ۔ حافظ عمار یاسر گروپ کے عبدالغفار،عبدالجبار منڈی والے،ملک ممتاز(ر)پولیس والے تعلق رکھتے ہیں ۔ یہاں پر سردار ممتاز خان ٹمن گروپ بھی اپنا تشخص رکھتا ہے ۔

یونین کونسل ٹہی جو کہ گاءوں تہی اور دودیال پر مشتمل ہے چیئرمین یو سی ملک عبدالقادر صابر ٹہی کہ اگرچہ سردار غلام عباس سے گہرے مراسم بھی ہیں لیکن 2018کے انتخابات میں ق لیگ کے حافظ عمار یاسر کو بھر پور سپوٹ کیا تھا ۔ یہا ں پر سردار غلام عباس گروپ کے ملک عاشق ،ملک خاکی جان ،حاجی اللہ دتہ ٹہی ،حاجی کرم حسین دودیال،ٹھیکیدار ملک خالد اشرف، نمبردار سلطان خاں ٹہی اور انکی برادری موجود ہے ۔ اور سردار غلام عباس کا سیاسی گروپ میں نمایا ں ہیں ۔ جبکہ ممتاز مسلم لیگی ملک خالد ٹہی ،ملک غلام شبیر ،ملک سجاد اور حافظ عماریاسر کی زاتی برادری ق لیگ کی سپورٹر ہے ۔ ٹہی یونین کونسل ملک سلیم اقبال کے دست راست ملک فیروز خان دودیال کا مضبوط دھڑا ہے اور ن لیگ کیساتھ کھڑا ہے جس میں ملک شہاب الدین ٹہی ،ملک تنویر (نذیر گروپ) بھی سلیم اقبال کے ساتھ ہے ۔

یونین کونسل نکہ کہوٹ جس میں نکہ کہوٹ،ادلکہ ،ممدوٹ،چکوالیاں مورت شامل ہے ۔ چیئرمین نکہ کہوٹ ملک عبدالمنان جس کے دیرینہ مراسم تو سردار غلام عباس کے ساتھ تھے مگر2018کے انتخابات میں حافظ عمار یاسر کو مکمل سپورٹ کیا جس کی وجہ سردار غلام عباس اور ق لیگ اتحاد تھا ۔ ملک ایوب ادلکہ وائس چیئرمین یوسی ملک سفیر مورت سلیم اقبال گروپ سے تعلق رکھتے ہیں جبکہ مکہ برادران حاجی اشرف ،حاجی بشیر،چکوالیاں سے ملک عبدالغفار چکوالیاں سلیم اقبال گروپ سے ہیں ۔ سردار غلام عباس گروپ کے ماسٹر ملک محمد سعید آف مورت اور حافظ عمار یاسر گروپ کے جنرل (ر)صدیق ملک کے بھائی ملک محمود آف مورت حاجی محمد اقبال ادلکہ ،ملک منظور ممدوٹ،ملک مقبول چکوالیاں ،ملک عامر چکوالیاں اپنا ایک دھڑا رکھتے ہیں ۔

یونین کونسل ملکوال اس میں ملکوال اور اکوال شامل ہیں ۔ چیئرمین یوسی ملک ریاض اعوان اکوال کا تعلق حافظ عماریاسر گروپ سے ہے ۔ جبکہ سابق ناظم ملک ارشد ،ملک سجادملکوال،سلطان رشید اکوال اور چوہدری خالد ارائیں برادری کا تعلق سردار غلام عباس گروپ سے ہے ۔ حافظ عماریاسر گروپ کے ملک کبیر اعوان محلہ محمد آباد،چوہدری محمد خان ارائیں کو نسلر،مہر نصیر کونسلر،ملک فدا ملکوال کا تعلق حافظ عماریاسر سے ہے ۔

جبکہ ملک سلیم اقبال گروپ کے سابق چیئرمین ملک محمد اقبال پیلس ہوٹل ،ملک سعد امین ملکوال ،ملک جاوید ،ملک سلیم سٹیل والے ،ملک ظل،ملک صفدر کونسلر ا اکوال،عمرحیات ارائیں سلیم اقبال گروپ سے ہیں ۔ یہ ن لیگ کے نظریاتی لوگ ہیں اور اپنا دھڑا رکھتے ہیں یہا ں پر معروف قانون دان طارق ایڈووکیٹ کا بھی اپنا ایک موثر گروپ اور دھڑا ہے ۔ سابق صدر بار اور مذہبی حلقوں میں بھی مقبول ماہر قانون ملک طارق ایڈووکیٹ ناظم یوسی بھی رہ چکے ہیں ،ملک طارق ایڈووکیٹ کا ملک سلیم اقبال اور سردار غلام عباس دونوں سے گہرے مراسم ہیں لہذا دونوں شخصیتوں کے اتحاد کی صورت میں ملک طارق ایڈووکیٹ کا دھڑا بھرپور ساتھ دیگا ۔

یونین کونسل پیڑہ فتحال ۔ چوکھنڈی ،بھگٹال ،ڈھوک ہم،ڈھوک باز،چک پٹال اس یوسی میں چیئرمین ملک الفت اعوان تریڑ ن لیگ کے نظریاتی ہونے کیو جہ سے ملک سلیم اقبال کیساتھ کھڑے ہیں ۔ یہاں پر ملک غلام حسن چوکھنڈی سابق کونسل ملک شاہنواز چوکھنڈی ،نمبردار ملک صادق،ملک شاہد،قاری عبدالرحمن،ملک باز خان ڈھوک ہم،شیخ الطاف پیڑہ فتحال ،ملک ریاض اعوان مقیم لاہور ملک سلیم اقبال کیساتھ ہیں ۔ جبکہ سردار غلام عباس گروپ میں ملک امتیاز چک پٹال اور ان کے ساتھی ہیں ۔ سردار ممتاز ٹمن گروپ میں حافظ دوست محمد سابق ناظم اور ملک فتح خان ڈھوک بازا اور حافظ عماریاسر کیساتھ ملک سرفراز ،ملک حقنواز چوکھنڈی ،ملک فاضل ،ملک امیر چوکھنڈی کھڑے ہیں ۔

سگھر یونین کونسل میں سگھر ،بلال آباد،اور چک گھڑکیال شامل ہیں ۔ اس یونین کونسل میں نمبردار ملک خالد سگھر ،چوہدری امیر خان ارائیں آف سگھر ن لیگ کے نظریاتی ہیں اور ملک سلیم اقبال کے دھڑا میں ہیں ۔ اگرچہ چوہدری امیر خان ارائیں سگھر کے ذاتی مراسم سردار منصور حیات ٹمن سے بھی ہیں ۔ یہاں پر سردار غلام عباس گروپ کے سید مبارک شاہ ہمدانی 2018کے الیکشن میں حافظ عمار یاسر کو سپورٹ کی تھی اور پھر حافظ عمار یاسر کے ساتھ ہی منسلک ہوگئے ۔ یہاں پر سابق چیئر مین ملک کبیر اعوان کا ذاتی تعلق ملک فلک شیر اعوان کے ساتھ ہے اور ن لیگ کے نظریاتی ہیں ۔ حاجی محمد افضل زرگر،ملک ضمیر اعوان ،ملک ظفر چک کھڑیال کا تعلق حافظ عمار یاسر گروپ سے ہیں ۔ یہاں پر سردار غلام عباس اور سردار ممتاز گروپ بھی موجود ہے ۔

دھولر یونین کونسل جس میں دھولر ،موگلہ ،ڈھوک ڈالی شامل ہیں ۔ اس یو سی میں چیئرمین ملک اکرم سیال کا تعلق سردار ممتاز گروپ سے ہے ۔ جبکہ حافظ عمار یاسر گروپ میں حافظ شیر خان ،ملک ندیم ڈھوک ڈالی شامل ہیں ۔ ملک منصب خان سابق ناظم ڈھوک ڈالی دھولر کی سادات برادری سید حسن شاہ ہمدانی اور ان کے ساتھی سردار غلام عباس گروپ میں ہیں ۔ حاجی ازرم ،ملک ظفر اقبال موگلہ ،چوہدری خضر حیات موگہ ارائیں کونسلر ارائیں برادری موگلہ سردار ممتاز خان ٹمن گروپ میں ہیں ۔ جبکہ ملک وزیر حسین دھولر سابق ناظم یوسی دھولر نمبرار ملک شیر بہادر ،ملک اللہ دتہ سابق کونسلر ڈھوک ڈالی ،ملک شوکت اقبال سابق نائب ناظم ملک سلیم اقبال کے گروپ میں ہیں ۔ یونین کونسل دھولر میں سادات اور ارائیں برادری دو بڑی موثر برادریاں ہیں ۔ جبکہ تلہ گنگ بار کی دو اہم شخصیات ملک ریاض اعوان موگلہ ایڈووکیٹ اور ملک شوکت موگلہ ایڈووکیٹ کا تعلق بھی اسی یونین کونسل سے ہے ۔ دونوں ایک موثر سیاسی قوت رکھتے ہیں ۔

یونین کونسل جھاٹلہ میں کھچیاں ،محمود والہ ،کوٹہڑہ اور جھاٹلہ شامل ہے ۔ اس یوسی میں سردار ممتاز ٹمن گروپ کے شیخ محمد اقبال جھاٹلہ سابق ناظم جبکہ ملک غلام محمد جھاٹلہ ،ماسٹر افضل ،فیاض حیدر ،میاں محمد ملک (جرنلسٹ)بھی موجود ہیں ۔ جو کہ ایک موثر سیا سی قوت رکھتے ہیں ماضی میں ان کا تعلق سلیم اقبال سے رہا ہے ۔ آئندہ ان کی حکمت عملی کیا ہوتی ہے قبل از وقت ہے ۔ اسی یوسی میں ملک منظور حسین جھاٹلہ ایک موثر سیاسی قوت رکھتے ہیں اور حافظ عمار یاسر کے ساتھ کھڑے ہیں ۔ جبکہ سابق ناظم ملک رضا عباس جھاٹلہ ،ملک شاکر کوٹہڑہ ،ملک سلیم کھچیاں کا تعلق سردار غلام عباس گروپ سے ہے ۔

قارئین سلسلہ جاری ہے بہت سی اہم شخصیات کے نام یقین رہ گئے ہونگے ۔ لہذا التماس ہے کہ نشاندہی ضرور کریں تاکہ آئندہ کالم میں وضاحت کر سکوں ۔ انشا اللہ تحصیل تلہ گنگ کی باقی نو یونین کونسلز اور ٹی ایم اے پر اگلے ہفتہ گفتگوہو گی ۔ اس کے بعد ویلج کونسلز کا تذکرہ ہو گا اور پھر تحصیل چیئرمین تلہ گنگ ،لاوہ اور ٹی ایم اے میں اقتدارکا تاج کس کے سر پر سجے گا تفصیل سے لکھوں گا ۔

اپنی آراء سے ضرور مطلع کریں شکریہ

Subscribe to comments feed Comments (0 posted)

total: | displaying:

Post your comment

  • Bold
  • Italic
  • Underline
  • Quote

Please enter the code you see in the image:

Captcha
  • Email to a friend Email to a friend
  • Print version Print version
  • Plain text Plain text

Tagged as:

No tags for this article

Rate this article

0