صفحہ اول | خبریں | مذہبی جماعتیں | مولانا عبد الوہاب صاحب کا تاریخی خطاب

مولانا عبد الوہاب صاحب کا تاریخی خطاب

Font size: Decrease font Enlarge font


تلہ گنگ (بیوروچیف) عالمی تبلیغی جماعت رائے ونڈ مرکز کے امیر حاجی عبدالوھاب نے کہا ہے کہ دنیا کی گھٹن سے نکلنے کا واحد علاج دعوت الی اللہ ہے اللہ کے ساتھ اس کے بندے کا تعلق جوڑنا ہی تبلیغ کا بنیادی مقصد ہے ،امت کی نجات امر بالمعروف ونہی عن المنکر میں مضمر ہے ۔ان خیالات کااظہار انہوں نے گزشتہ روز مدرسہ ظہورالاسلام اکوال آمد کے موقع پر وہاں جمع ہونے والے ہزاروں افراد سے مختصرخطاب کرتے ہوئے کیا ۔اس موقع پر مہتمم مدرسہ ظہورالاسلام اکوال مولانا اخلاق احمد ضلعی چیئرمین ملک طارق اسلم ڈھلی ،مشیر وزیراعلیٰ پنجاب ملک سلیم اقبال،عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے امیر مولانا عبیدالرحمن انور ،جے یو آئی (ف) کے ضلعی امیر قاری زبیراحمد اور دیگر علماء اکرام اور اہم شخصیات بھی موجود تھیں ۔ عالمی تبلیغی جماعت رائے ونڈ مرکز کے امیر حاجی عبدالوھاب نے کہا ہے کہ رنگ ونسل کا امتیاز، علاقائی تعصب ،امیر غریب کی تفریق کئے بغیر اس دعوت کے کام کو پوری دنیا میں پہنچانا ہے ہر شخص داعی بن جائے اپنے گھروں ،دکانوں ،محلوں اور شہروں میں اسلام کو لانے کی جستجو اور فکر پیدا کرنی ہے حقوق اللہ کے ساتھ ساتھ حقوق العباد کی اہمیت کو نظر انداز نہیں کرنا مساجد کو آباد کرنا ہوگا اپنے اعمال کی درست کرنا ہے دن کے وقت دین کی محنت اور رات کی تاریکیوں میں اٹھ اٹھ کر اللہ رب العزت سے کی ہوئی محنت کی کامیابی مانگنا ہے دین کیا ہے دین کی محنت کیا ہے یہ عظیم دین ہماری زندگیوں میں کس طرح تبدیلیاں لائے گا اسکو سیکھنا ہے روزانہ گشت اور تعلیم کو قائم کرنا ہے مساجد کی رونقوں کو آباد کرنا ہے اپنے فیصلے اور معاملات کو حل کروانے کیلئے مساجد کا رخ کرنا ہے امت بھلائی اور فلاح کا جو راستہ بھول گئی ہے اسکو وہ راستہ دکھانا ہ ہے مزید انہوں نے کہا کہ دینی دعوت کی فکر اور تڑپ کو ہر کلمہ گو مسلمان کے دل میں پیدا کرنا،احیائے اسلام کیلئے زندگی کا گزارانا ،اکرام مسلم کی ترغیبات کو عام کرنا ہماری سوچوں کا محور ہونا چاہیے ،امت کی نجات امر بالمعروف ونہی عن المنکر میں مضمر ہے بھلائی کی دعوت دینا اور برائی سے روکنا۔بھلائی اور خیر کے معاملے کو عام کرنے کے لئے ہرامتی داعی بن جائے تبلیغی جماعت کا مقصد پوری دنیا میں اسلام کی دعوت پہنچانا ہے اس اہم کام کے فریضہ کی ادائیگی کے لئے ہر امتی کو گھروں سے نکالنا اس کام کی اہمیت پر محنت کرنا ہے اللہ تعالیٰ نے خاتم الانبیاء بنا کر بھیجا نبوت کا دروازہ مقفل ہونے کے بعد اس کام کی ذمہ داری صحابہ اکرامؓؓ نے احسن انداز میں نبھائی اسلام محبت ،اخوت اور امن کا دین ہے اکیلی رب العزت کی ذات سے سب کچھ ہونے کا یقین، دنیا سے کچھ نہ ہونے کا یقین جب ہمارے دلوں میں آجائے گا تب اللہ کی رحمتوں اور برکتوں کا نزول شروع ہو جائے گا مخلوق کا خالق سے تعلق مضبوط کرنا ہوگا نبی پاک ﷺ کی محنت کو اپنانا ہوگا ہم دعوت وتبلیغ کے کام کو بولیں گے،سوچیں گے ،سنیں گے اور رو رو کر اپنے ناراض رب سے گناہوں کی معافی مانگیں گے ہرامتی نے اس کام کو کرتے کرتے مرنا ہے مرتے مرتے کرنا ہے نفسا نفسی کے اس دور میں ہر شخص ایک ایسی گھٹن میں مبتلا ہے جس کا واحد علاج دعوت الی اللہ ہے اللہ کے ساتھ اس کے بندے کا تعلق جوڑنا ہی تبلیغ کا بنیادی مقصد ہے آج پوری بشریت اللہ کا تعارف چاہتی ہے ہر طرف یہی چیخ وپکار ہے کچھ اولاد کے لئے پریشان ہیں کچھ اولاد سے پریشان ہیں ،کچھ دولت کے لئے پریشان ہیں کچھ دولت سے پریشان ہیں الغرض ہر انسان پریشانی اور مصبیتوں میں جھکڑا ہوا ہے اپنی گھروں ،محلوں ،ملکوں کو ان گھٹنوں سے نجات دلانے کے لئے ہر امتی اپنا جان مال وقت دعوت میں لگائے۔

Subscribe to comments feed Comments (0 posted)

total: | displaying:

Post your comment

  • Bold
  • Italic
  • Underline
  • Quote

Please enter the code you see in the image:

Captcha
  • Email to a friend Email to a friend
  • Print version Print version
  • Plain text Plain text

Tagged as:

No tags for this article

Rate this article

0