صفحہ اول | خبریں | ایم ایس ڈاکٹر عبد الرزاق کی کوششوں سے سٹی ہسپتال اور تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال کے مختلف شعبہ جات میں تقسیم کرکے مکمل سہولیات کی فراہمی کیلئے ڈپٹی کمشنر چکوال نے ایم یو دستخط کرنے کیلئے نوٹیفکیشن جاری کردیا

ایم ایس ڈاکٹر عبد الرزاق کی کوششوں سے سٹی ہسپتال اور تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال کے مختلف شعبہ جات میں تقسیم کرکے مکمل سہولیات کی فراہمی کیلئے ڈپٹی کمشنر چکوال نے ایم یو دستخط کرنے کیلئے نوٹیفکیشن جاری کردیا

Font size: Decrease font Enlarge font
ایم ایس ڈاکٹر عبد الرزاق کی کوششوں سے سٹی ہسپتال اور تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال کے مختلف شعبہ جات میں تقسیم کرکے مکمل سہولیات کی فراہمی کیلئے ڈپٹی کمشنر چکوال نے ایم یو دستخط کرنے کیلئے نوٹیفکیشن جاری کردیا

تلہ گنگ (تلہ گنگ ڈاٹ کام)ایم ایس ڈاکٹر عبد الرزاق کی کوششوں سے سٹی ہسپتال اور تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال کے مختلف شعبہ جات میں تقسیم کرکے مکمل سہولیات کی فراہمی کیلئے ڈپٹی کمشنر چکوال نے ایم یو دستخط کرنے کیلئے نوٹیفکیشن جاری کردیا ہے ۔ جس کے تحت ڈیپارٹمنٹ کی تفصیل ڈپٹی کمشنر نے اپنے نوٹیفکیشن میں دیدی حالانکہ ڈیپارٹمنٹ کی تقسیم مشاورت کے بعد عمل میں لائی جانی چاہیے مختلف سیاسی ، عوامی و سماجی حلقوں نے پرزور مطالبہ کیا کہ سٹی ہسپتال میں اہم شعبہ جات رکھے جائیں جن میں گا ئنی ، بچوں کا شعبہ، میڈسن کا شعبہ سرفہرست ہے ، کیونکہ چھوٹے بچوں اور حاملہ خواتین شہر کے اندر سہولت مہیا ہونے کی چاہیے دوسرا ایم ایل سی ڈینٹل ، آئی ، ای این ٹی آرتھوپیڈک کے شعبہ جات ٹی ایچ کیو ہسپتال منتقل کئے جائیں ۔ گائنی اور بچوں کے شعبہ جات شہر میں رکھنے کیلئے ڈاکٹر یاسین راشد صوبائی وزیر صحت نے بھی کہا تھا ۔ اب یہ کیسے ممکن ہے کہ ایک چھوٹے بچے اور ایمرجنسی میں آئی خاتون کو کہا جائے کہ آپ کا علاج سٹی ہسپتال میں نہیں بلکہ تحصیل ہیڈ کوارٹر ہسپتال میں ہوگا ۔ لہذا شعبہ جات کی تقسیم مثبت اور مریضوں کی سہولت کو مد نظر رکھ کی جائے تاکہ نقصان کے بجائے فائدہ ہو 

Subscribe to comments feed Comments (0 posted)

total: | displaying:

Post your comment

  • Bold
  • Italic
  • Underline
  • Quote

Please enter the code you see in the image:

Captcha
  • Email to a friend Email to a friend
  • Print version Print version
  • Plain text Plain text

Tagged as:

No tags for this article

Rate this article

0